سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(35) احرام کی دو رکعتوں سے متعلق اگر کسی فرض نماز کا وقت نہیں ہے..الخ

  • 7366
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-28
  • مشاہدات : 486

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

احرام کی دو رکعتوں سے متعلق اگر کسی فرض نماز کا وقت نہیں ہے تو کیاآپﷺ سے کوئی خاص نص وارد ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

نبی اکرم ﷺ سے خاص احرام کے لیے کوئی نماز ثابت نہیں ہے اس لیے ہم کہتے ہیں کہ اگر کسی فرض نماز کا وقت ہے تو فرض نماز کے بعد احرام باندھے اور اگر کسی فرض نماز کا وقت نہیں ہے تو بغیر نماز پڑھے ہی احرام باندھ لے اور اگر تحیۃ الوضوء کی نیت سے دو رکعت پڑھ لے تو اچھا ہے اسی طرح اگر چاشت کا وقت ہے اور نماز چاشت کی نیت سے پڑھ لے تو بھی اچھا ہے۔

 

فتاوی مکیہ

صفحہ 27

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ