سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(283) کیا عورت اپنا حق مہر معاف کرسکتی ہے؟

  • 23048
  • تاریخ اشاعت : 2017-10-01
  • مشاہدات : 336

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جس عورت کی عمر16 سال کی ہو اور علامات بلوغت کے جو ہوتے ہیں،وہ ہوگئے ہوں اور نکاح کے بعد وہ عورت اپنا زر مہر پہلی رات کو معاف کردے تو مہر شرعی معاف ہوگیا یانہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جب عورت  نے بعد بلوغ اپنا مہر بخوشی خاطر معاف کردیا تو وہ مہر شرعاً معاف ہوگیا۔اللہ تعالیٰ فرماتا ہے:

﴿ فَإِن طِبنَ لَكُم عَن شَىءٍ مِنهُ نَفسًا فَكُلوهُ هَنيـًٔا مَريـًٔا ﴿٤﴾... سورة النساء

"پھر اگر وہ اس میں سے کوئی چیز تمہارے لیے چھوڑنے پر دل سے خوش ہوجائیں تو اسے کھالو،اس حال میں کہ مزے دار،خوشگوار ہے۔

  ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

مجموعہ فتاویٰ عبداللہ غازی پوری

کتاب النکاح ،صفحہ:487

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ