سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(314)مسیحیوں کو بھائی بنانا حرام ہے

  • 16770
  • تاریخ اشاعت : 2016-06-19
  • مشاہدات : 718

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا ہم مسیحیوں کو بالکل اسی طرح اپنے بھائی سمجھ سکتے ہیں جس طرح مسلمانوں کو بھائی سمجھتے ہی؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

﴿يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لَا تَتَّخِذُوا الْيَهُودَ وَالنَّصَارَىٰ أَوْلِيَاءَ ۘبَعْضُهُمْ أَوْلِيَاءُ بَعْضٍ ۚ وَمَن يَتَوَلَّهُم مِّنكُمْ فَإِنَّهُ مِنْهُمْ ۗ إِنَّ اللَّـهَ لَا يَهْدِي الْقَوْمَ الظَّالِمِينَ ﴿٥١﴾...المائدة

’’اے مومنو! یہودونصاریٰ کو دوست نہ بناؤ۔ وہ ایک دوسرے کے دوست ہیں۔ تم میں سے جو کوئی ان سے دوستی رکھے گا وہ انہیں میں سے ہوگا۔ اللہ تعالیٰ ظالم لوگوں کو ہدایت نہیں دیتا۔‘‘

نیز فرمایا:

﴿إِنَّمَا الْمُؤْمِنُونَ إِخْوَةٌ ... ١٠﴾...الحجرات

’’(یاد رکھو) سارے مسلمان بھائی بھائی ہیں۔‘‘

تو اللہ تعالیٰ نے حقیقی اخوت صرف مومنوں کے لئے ثابت کی ہے۔ جناب رسول اللہe سے صحیح حدیث میں مروی ہے کہ آپ نے فرمایا:

(اَلْمُسْلِمْ أَخْو الْمُسْلِمِ لاَ یَظْلِمُه وَلاَ یَخْذُلُه وَلاَ یَکْذِبُه وَلاَ یَحْقِرُه)

’’مسلمان مسلمان کا بھائی ہوتا ہے وہ اس پر ظلم نہیں کرتا‘ اسے بے یارومددگار نہیں چھوڑتا‘ اس سے جھوٹ نہیں بولتا اور اس کی تحقیر نہیں کرتا‘‘(مسند احمد۲/ ۶۸‘ ۳۶۰۔ صحیح بخاري حدیث نمبر ۲۴۴۲‘ ۶۹۵۱‘ صحیح مسلم حدیث نمبر ۲۵۸۰۔ سنن ابو داؤد حدیث نمبر۴۸۹۳۔ جامع ترمذي حدیث نمبر ۱۴۲۶‘ ۱۹۲۸۔)

ھذا ما عندي واللہ أعلم بالصواب

فتاویٰ دارالسلام

ج 1

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ